106

رینج آفیسر چکار کو نقصان جنگل کی جانچ پڑتال مہنگی پڑ گئی،بااثر شخص کی پٹائی

رینج آفیسر چکار کو نقصان جنگل کی جانچ پڑتال مہنگی پڑ گئی،بااثر شخص کی پٹائی
راجہ افضال کے ہاتھوں پٹائی ، گارڈ بک کے ٹکڑے ٹکڑے جبکہ کپڑے پھاڑ دیئے گئے
جان بچا کر چیک پوسٹ پر پہنچا تو شرپسند عناصر یہاں پہنچ کر پھر مارا پیٹا اور گالیاں دیں
مظفرآباد (عدالت نیوز) رینج آفیسر چکار کو نقصان جنگل کی جانچ پڑتال مہنگی پڑ گئی ، بااثر راجہ افضال کے ہاتھوں پٹائی ، گارڈ بک کے ٹکڑے ٹکڑے جبکہ کپڑے پھاڑ دیئے گئے ۔ رینج آفیسر افتخار نے صحافیوں کو بتایا کہ عوامی شکایات تھیں کہ بڑی مقدار میں سرسبز درخت کاٹے جا رہے ہیں جس پر وہ جنگل میں پہنچے تو راجہ افضال اور ان کے ساتھیوں نے ان پر حملہ کر دیا ۔ وہاں سے جان بچا کر چیک پوسٹ پر پہنچا تو تھوڑی دیر بعد چیک پوسٹ آ کر شرپسند عناصر نے مجھے پھر مارا پیٹا اور گالیاں دیں ۔ راجہ افضال سابق وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان کا قریبی عزیز ہے اور اس کا کہنا ہے کہ یہاں صرف ہمارا قانون چلتا ہے ، جنگلات کا نہیں ۔ جنگلات ہمارے اپنے ہیں ہم چاہے جتنے مرضی درخت کاٹیں ہمیں منع کرنے والے اپنے پاﺅں پر کھڑے نہ ہو سکیں گے ۔ رینج آفیسر چکار نے بتایا کہ اس سے قبل بھی مذکورہ شخص متعدد بار نقصان جنگل کرتا رہا ہے اور جنگلات عملے پر حملے کرتا رہا ، کچھ عرصہ قبل چیف کنزرویٹر جنگلات راجہ خضر حیات کو بھی تھپڑ مار دیا تھا مگر فاروق حیدر کی ایماءپر اسے بچا لیا گیا اور پرچہ نہیں ہونے دیا اس بار بھی تھانہ چکار گیا تو کوئی شنوائی نہیں ہوئی ۔ وزیر جنگلات ، سیکرٹری جنگلات اور محکمہ پولیس کے اعلیٰ حکام نوٹس لیتے ہوئے مذکورہ شخص کے خلاف مقدمہ درج کروا تے ہوئے شرپسند عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے تاکہ نقصان جنگل روکنے کے ساتھ ساتھ محکمہ جنگلات کے ملازمین کو بھی تحفظ مل سکے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں