968

جعلی باشندہ ریاست سرٹیفکیٹ بنوانے کے دھندے کاانکشاف

میرپور( ظفر مغل سے )جعلی باشندہ ریاست سرٹیفکیٹ بنوانے کے دھندے کاانکشاف،ن لیگی سابق وزیرحکومت شوکت شاہ مہاجرین مقیم پاکستان کے حلقہ سے منتخب پی ٹی آئی کے ممبرقانون سازاسمبلی عاصم شریف بٹ کے آمنے سامنے آگئے،ڈپٹی کمشنربحالیات میرپورچودھری حق نوازکے دفترمیں دونوں فریقین کاٹاکرا۔ایک دوسرے کیخلاف شکایات کاپنڈوراباکس کھول دیاعاصم شریف بٹ کاباشندہ ریاست جعلی ہے،دستاویزات کاپلندہ ڈپٹی کمشنربحالیات کوپیش ۔امرتسرکے رہائشی عبدالعزیزبٹ نے حکومت پاکستان سے الاٹمنٹ کاکلیم لیاان کاپوتاعاصم شریف بٹ ریاستی باشندہ کیسے ہوسکتاہے۔شوکت شاہ کی ڈپٹی کمشنربحالیات کے دفترمیں دہائی،1482ووٹ جعلی ہیں جنہیں ہائیکورٹ اورالیکشن ٹربیونل میں بھی چیلنج کررکھاہے ،کشمیریوں کواقلیت کومیں بدلنے کامذموم دھندہ بندہوناچاہیے، میڈیاسے سابق وزیرکی بات چیت۔تفصیلات کے مطابق آزادکشمیرکے سابق وزیرخوراک ون لیگی مرکزی رہنماسیدشوکت شاہ بدھ کے دن ضلع کچہری میرپورمیں واقع دفتر ڈپٹی کمشنربحالیات چودھری حق نوازکے پاس پہنچے تواس وقت پی ٹی آئی کے ٹکٹ پرمہاجرین کے حلقہ سے منتخب ہونیوالے ممبراسمبلی عاصم شریف بٹ بھی اپنے ساتھیوں کے ہمراہ وہاں موجودتھے اس موقع پرسابق وزیرسیدشوکت شاہ نے ڈپٹی کمشنربحالیات چودھری حق نوازکوایک تحریری درخواست بخلاف انسدادجعلی غیرریاستی لوگوں کے باشندہ ریاست سرٹیفکیٹ عاصم شریف بٹ کی تصدیق پربنائے جانے کے حوالے سے دیتے ہوئے دستاویزات کاایک پلندہ بھی انہیںتھمادیااورالزام عائدکیاکہ عاصم شریف بٹ باشندہ ریاست نہ ہیں اورمیں نے 1482ووٹ آزادجموں وکشمیرہائیکورٹ ،الیکشن ٹربیونل میں چیلنج کررکھے ہیں مقدمہ کی آئندہ تاریخ سماعت18مئی مقررہے انہوں نے مو¿قف اپنایاکہ اگر اسی طرح جعلی باشندہ ریاست سرٹیفکیٹ جاری ہونے کادھندہ جاری رہاتو بوقت رائے شماری اس کے نتائج پربرے اثرات پڑیں گے کیونکہ میرے پاس عاصم شریف بٹ کے غیرریاستی ہونے کے ناقابل تردیدثبوت موجود ہیں اورمذکورہ ممبراسمبلی کے داداعبدالعزیزبٹ اپنے آپ کوامرتسرکارہائشی ظاہرکرکے الاٹمنٹ کاکلیم بھی حاصل کرچکے ہیں ۔اوران کے آباﺅاجداد مشرقی پنجاب امرتسرہندوستان سے ہجرت کرکے ملتان پاکستان میں آباد ہوئے اس طرح عاصم شریف بٹ اوران کے دیگرخاندان کے افرادکاریاست جموں وکشمیرسے دورکابھی تعلق واسطہ نہ ہے اس موقع پرڈپٹی کمشنربحالیات چودھری حق نوازنے درخواست گزارکویقین دلایاکہ باشندہ ریاست سرٹیفکیٹ کی اجرائیگی کیلئے مروجہ قانون وضوابط کے مطابق ہی باشندہ ریاست جاری کئے جائینگے اورجوکوئی بھی قانون ضابطہ سے ہٹ کرباشندہ ریاست بنوانے کے دھندے میں ملوث پایاگیاتو اس کیخلاف بھی کارروائی ضابطہ عمل میں لائی جائیگی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں