740

کنول مطلوب قتل کیس کا فیصلہ،مجرم کو 3 بار سزائے موت

کنول مطلوب قتل کیس کا فیصلہ،مجرم کو 3 بار سزائے موت اور60 لاکھ روپے جرمانہ کی سزا
ڈڈیال( اسد شریف کالس) ایڈیشنل ضلعی فوجداری عدالت ڈڈیال نے کنول مطلوب کیس میں ملزم معین بشیر عرف صاحبو کو مجرم قرار دیتے تین بار سزائے موت کا فیصلہ سنایا جبکہ 50 لاکھ روپے جرمانے کی سزا بھی سنائی گئی تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج محمد ادریس بھٹی اور ایڈیشنل ضلع قاضی سرفراز عباسی نے فیصلہ سنایا کنول مطلوب کیس کا فیصلہ کل مورخہ19/4/22 کو اس کیس میں اے پی پی جنید صابر سلطانی ایڈووکیٹ ریاض عالم ایڈووکیٹ اور محمود احمد کیانی ایڈووکیٹ استغاثہ۔ ملزمان کی طرف سے ابرار احمد مغل ایڈووکیٹ تھے ملزم معین کو دفعہ 364 میں مجرم قرار دیتے ہوئے سزائے موت دی 377/Apc زنابالجبر کی پاداش میں سزائے موت 302 apc قتل کرنے کی پاداش میں سزائے موت 544a ض۔ف میں 10لاکھ روپے ہرجانہ کی سزائیں سنائی گئی عدالت میں درجنوں افراد موجود تھے مجرم معین کو بھاری پولیس نفری کی نگرانی میں کمرا عدالت میں لایا گیا SSP میرپور کامران علی DSP چوہدری عنصر علی piراشد SHOs عمارڈار مہتاب اسلم سمیت دیگر افسران ونفری موجود تھی مجرم پورے اعتماد اور دلیری سے عدالت میں پیش ہوا اس کے چہرے پر کس قسم کا کوئی خوف نظر نہیں ایا کمرہ عدالت میں صحافیوں کی بھی بڑی تعداد موجود تھی مجرم معین کے بھائی امتیاز والد بشیر کو دفعہ 202 میں بری کردیا گیا۔
میرپور(عدالت نیوز) ریاست کے بھیانک اندوہناک کیس کنول مطلوب قتل کیس میں ملوث سفاک مجرم کو عدالت ایڈیشنل ضلعی فوجداری ڈڈیال سے سزا سنائے جانے کے بعد ڈسٹرکٹ بار میرپور کے صدر امتیاز حسین راجہ ایڈووکیٹ اپنی کابینہ اور اہل ڈڈیال پچوانہ گاﺅں، صدائے حق پارٹی کے نمائندگان کے ساتھ آج بدھ 11:30 بجے دن ڈسٹرکٹ بار میرپور کے آفس چیمبر میں پریس کانفرنس کریں گے جس میں وہ کنول مطلوب قتل کیس میں مجرم کو عدالت سے سزا سنائے جانے کے بعد اپنے اور اہل ڈڈیال کی طرف سے میڈیا نمائندگان کو اپنے ردعمل سے آگاہ کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں