HEC News

میرپور (ظفر مغل سے )ہائرایجوکیشن کمیشن پاکستان نے ملک بھر میں غیر قانونی ،جعلی فرضی اور غیر رجسٹرڈ یونیورسٹیوں اور کالجز کے بارے میں تازہ لسٹ اپنی ویب سائٹ پر جاری کر دی ہے جس کے مطابق پاکستان بھر کے چاروں صوبوں سمیت آزادکشمیر ضلع میرپور کے2 اداروں اور ضلع بھمبر کے ایک ادارے کو بھی بلیک لسٹ کر دیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں یونیورسٹیوں اور کالجز کی رجسٹریشن سے متعلقہ وفاقی ادارے ہائیر ایجوکیشن کمیشن آف پاکستان نے گزشتہ دنوں اپنی آفیشل ویب سائٹ پر ملک بھر کے چاروں صوبوں میں قائم غیر قانونی ،جعلی فرضی اور غیر رجسٹرڈ اداروں کی تازہ ترین تفصیلات جاری کرتے ہوئے ملک بھر میں 140یونیورسٹیز اور کالجز کی تفصیلات درج کیں ہیں جن میں آزادکشمیر ضلع میرپور میں قائم2 اداروں انسٹیٹیوٹ آف ایڈوانس سٹیڈیز آف انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈڈیال ،پاک کشمیر انسٹیٹیوٹ آف آئی ٹی میرپور اور ضلع بھمبر کے علاوہ الخیر یونیورسٹی کے الحاق شدہ آزادکشمیر کے تمام ادارے بھی بلیک لسٹ قرار دیئے گئے ہیں ۔طلبا و طالبات کو بھی ایس ای سی کی ویب سائٹ پر ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ان جعلی فرضی غیر قانونی اداروں میں داخلوں سے اجتناب برتیں۔
ان 140 سے زائد جعلی، غیر قانونی، اور غیر تسلیم شدہ تعلیمی اداروں پر نظر ڈالنے سے پتہ چلتا ہے کہ سب سے زیادہ پنجاب میں واقع ہیں (96) اس کے بعد سندھ (35)، خیبرپختونخوا (11) اور آزاد جموں و کشمیر (3)۔دلچسپ بات یہ ہے کہ فہرست میں بلوچستان اور گلگت بلتستان میں ایسا کوئی تعلیمی ادارہ نہیں ہے۔ویب سائٹ کی تفصیلات کے مطابق مندرجہ ذیل ادارے جعلی ،غیر قانونی ،غیر تسلیم شدہ درج کیے گئے ہیں۔جن کی تفصیل یہ ہے

 

غیر رجسٹرڈ اداروں کے نام پڑھنے کیلئے لنک پر کلک کریں

https://hec.gov.pk/english/universities/Pages/AJK/Illegal-DAIs.aspx

Scroll To Top