آزادکشمیر حکومت مالیاتی بحران کا شکار،وفاق نے بھی منہ موڑ لیا،ملازمین کی تنخواہیں بھی داؤ پر

farooq haider

مظفر آباد(کے این آئی)آزادکشمیر کی نئی نویلی حکومت بھی پائی پائی کو ترس گئی،وفاق کی طرف سے بھی دولت کے معاملے پر نو لفٹ،سرکاری ملازمین کو ماہ ستمبر کی تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے تین ارب60کروڑ روپے درکار جبکہ وفاقی خزانے نے صرف دو ارب تیس کروڑ روپے جاری کئے ،معاملات نمٹانے کیلئے آزاد حکومت کو مزید ایک ارب تیس کروڑ روپے چاہیئے جس کیلئے وفاق نے چپ سادھ لی ہے ، جبکہ زرائع کے مطابق سٹیٹ بینک نے بھی آزادحکومت کو مزید اوور ڈرافٹ دینے سے انکار کر دیا ہے جس کے باعث آزادکشمیر میں ن لیگ کی حکومت شدید مالیاتی بحران کا شکار ہو چکی ہے ، محکمہ مالیات کے زرائع کے مطابق آزادکشمیر کے ٹیکسزکی مد میں جمع ہونے والی رقم جو ساڑھے تین کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے وہ بھی کشمیر کونسل نے تاحال آزاد حکومت کو ریلیز نہیں کی اور پیپلز پارٹی کی سابقہ حکومت ساڑھے اٹھارہ ارب روپے کا جو اوور ڈرافٹ چھوڑ کر گئی تھی اب بیس ارب کی حد بھی کراس کر چکا ہے
Scroll To Top