پیپلزپارٹی آزاد کشمیر نے ایجوکیشن پیکج پر وزیر اعظم کی طرف سے بنائی گئی کمیٹی ہائی کورٹ میں چیلنج کر دی ،توہین عدالت کی درخواست سماعت کیلئے منظور

ppp

مظفرآباد(بیورو رپورٹ)پیپلزپارٹی آزاد کشمیر نے ایجوکیشن پیکج پر وزیر اعظم کی طرف سے بنائی گئی کمیٹی ہائی کورٹ میں چیلنج کر دی ۔وزیراعظم آزادکشمیر فاروق حیدر کے خلاف ہائی کورٹ میں توہین عدالت کی درخواست سماعت کیلیے منظوروزیراعظم نے پیپلزپارٹی حکومت کے منظور شدہ تعلیمی پیکیج میں تبدیلی کیلیے ریویو کمیٹی بنائی تھی ہائی کورٹ نے پیپلز پارٹی رہنماوں لطیف اکبر۔ مطلوب انقلابی۔میاں وحید کی درخواست پر تین رکنی جسٹس افتاب علوی ،جسٹس اظہرسلیم بابر جسٹس شیراز کیانی پر مشتمل لارجر بینچ قایم کردیا ، سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ تعلیمی پیکیج کو درست قرار دے چکی ہیں۔ وزیراعظم ان فیصلوں کو چیلنج نہیں کرسکتے درخواست گزار کا موقف آزادکشمیر ہائی کورٹ کا تین رکنی بینچ 17 اکتوبر کو کیس کی سماعت کرے گا ،تفیصلات کے مطابق سابق وزیرچوہدری لطیف اکبر. مطلوب انقلابی .میاں وحید کی طرف سے پٹیشنر دایر کی گہی پی پی پی رہنماؤں نے حکومت کی جانب سے تعلیمی پیکیج پر ری وزٹ کے حوالہ سے بنائی گئی کمیٹی پر عدالت سے رجوع کر دیا۔اس موقع پر وزیر خزانہ چوہدری لطیف اکبرنے کہا کے وزیر عظم آزاد کشمیر توہین عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں جب عدالت اس پر دو مرتبہ فیصلہ دے چکی ہے تو پھر حکومت تعلیمی پیکج پر کسے ری وزٹ کمیٹی قائم کر سکتی ہے انھوں نے کہا کہ عدالت عدالعالیہ اور عدالت العظمیٰ کے فیصلوں کے بعد حکومت کی جانب سے بنائی گئی کمیٹی غیر آئینی ، غیر قانونی اور غیر اخلاقی ہے۔

 

Scroll To Top