بھارتی وزیر خارجہ کے خطاب کے موقع پر کشمیریوں کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

kashmiri-in-new-yark

نیو یارک( کے این آئی)آزاد کشمیر کے سابق وزیر اعظم وپی ٹی آئی کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی قیادت میں نیویارک میں اقوام متحدہ کے بالکل سامنے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے بھارتی وزیر خارجہ کے خطاب کے موقع پر سینکڑوں کشمیریوں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ۔اس موقع پر مظاہرین نے آزاد کشمیر کے جھنڈے اوربینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھتے تھے جن پر بھارتی غاصبو کشمیر ہمارا چھوڑ دو ، کشمیر کشمیریوں کا ہے ،ہم چھین کے لیں گے آزادی، ہے حق ہمارا آزادی جیسے نعرے درج تھے اور مظاہرین اسی طرح کے فلک شگاف نعرے لگا رہے تھے۔ بیرسٹر سلطان محمود چوہدری جو چار روز قبل امریکہ پہنچے تھے یا رہے کہ بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے پچھلے سال بھی نیویارک میں ملین مارچ کی قیادت کی تھی ۔اس موقع پر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم بار بار مظاہرے کرتے رہیں گے جب تک کہ مقبوضہ کشمیر آزاد نہیں ہو جاتا۔اس موقع پر مظاہرے سے ڈاکٹر غلام نبی فائی،خالصتان تحریک کے سربراہ ڈاکٹر امرجیت سنگھ، سردار امتیاز خان نیو جرسی، سردار سوار خان،ڈاکٹر آصف رحمن، چوہدری ظہور، ڈاکٹر امتیاز، آفتاب شاہ، سردارساجد سوارخان، سردار ظریف خان واشنگٹن، راجہ یعقوب ، راجہ قدیر کینیڈا، شکاگو سے یاسین چوہان، مسلم لیگ ن امریکہ کے صدر روحیل ڈار،شاہین بٹ، پیپلز پارٹی امریکہ کے خواجہ فاروق، قاضی مشتاق، چوہدری اسحاق، چوہدری مدثر اور دیگر مقررین نے بھی مظاہرے سے خطاب کیا۔مظاہرین اس موقع پر بلند آواز میں پر جوش نعرے لگا رہے تھے۔ اس موقع پر جنرل اسمبلی کے باہر مندوبین بھی یہ نظا رہ دیکھتے رہے۔جب بیرسٹر سلطان محمود چوہدری مظاہرے سے خطاب کررہے تھے تو مندوبین بھی اقوام متحدہ کی عمارت سے انہیں دیکھتے رہے۔ بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے اس موقع پر اپنے خطاب میں مزید کہا کہ میں بھارتی وزیر خارجہ کی تقریر کا جواب دے رہا ہوں کہ کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ نہیں بلکہ کشمیرکشمیریوں کا ہے اور پچھلے 80 دن سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ ہے اور سینکڑوں کشمیری شہید اور ہزاروں کو بیلٹ گن سے زخمی کیا گیا ہے اور آل پارٹیز حریت کانفرنس کے رہنماؤن کو پابند سلاسل رکھا گیا ہے۔انھوں نے کہا کہ کشمیری طویل عرصہ سے اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں اور اپنی جانوں کے نذرانے دے رہے ہیں۔بھارت جان لے کے کشمیریوں کے جذبہ ء حریت کو بندو کے سنگینوں تلے دبایا نہیں جا سکتا ۔لیکن میں مودی جو کہ ہندوو انتہاء پسند اور جارح ہے میں اسے متنبہ کرتا ہوں کہ اگر اس نے لائن آف کنٹرول پر حملے کی کوشش کی تو کشمیری عوام لائن آف کنٹرول کو بھارتی فوج کا قبرستان بنا دیں گے۔ہم نے بھارت کے مکروہ چہرے کو بے نقاب کرنے کے لئے پچھلے سال بھی ملین مارچ کیا تھا اس سال بھی کریں گے اور آئندہ بھی ملین مارچز کا سلسلہ جاری رکھیں گے لہذا کشمیری آئندہ بھی ملین مارچ کے لئے میری کال کے منتظر رہیں۔اس موقع پر مظاہرین نے خطاب کرتے ہوئے بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی مسئلہ کشمیر کے لئے کوششوں کو سراہا اور انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ و آئندہ بھی ہ جب احتجاج کی کال دیں گے ہم انکی کال پر لبیک کہیں گے
Scroll To Top