شاہ ہمدان کالج میرپور سے اغواء ہونے والی طالبہ کوئٹہ سے بازیاب،اغواء کار بھی گرفتار

Arrested

میرپور(راجہ شفاقت+عماد گل)شاہ ہمدان کالج میرپور سے اغواء ہونے والی طالبہ کو کوئٹہ سے بازیاب کرا لیا گیا، مغوی دو بھائیوں کو ان کی والدہ سمیت گرفتار کر کے تھوتھال تھانہ میں بند کر دیاگیا، مزید تفتیش جاری، اہم تر انکشافات متوقع۔ تفصیلات کے مطابق چند روز قبل شاہ ہمدان کالج میرپور سے انیسہ مہربان دختر محمد مہربان قوم ستی راجپوت کو اغواء کر لیاگیا تھا جس کے بعد ملزمان نے مغویہ انیسہ کے ورثاء سمیت بیرون ممالک میں مقیم رشتہ داروں کو مغویہ کی مختلف تصاویروغیرہ بھیج کر 10کروڑ روپے تاوان طلب کیا تھااور گاہے بگائے مغوی طالبہ کی فریش صورتحال کی تصاویر بھی ورثاء کو بھیجتے رہے ، ورثاء کی درخواست پر ایس ایچ او تھانہ تھوتھال نے معاملہ کی چھان بین کے بعد سب انسپکٹر طارق، اے ایس آئی ابرار احمد، ڈی ایف سی شہزاد احمد اور کانسٹیبل قمر اقبال پر مشتمل چھاپہ مار ٹیم کو کوئٹہ روانہ کیا جس نے سخت تگ و دو کے بعد ملزمان کا سراغ لگاتے ہوئے ارباب ٹاؤن کوئٹہ سے مغوی انیسہ مہربان کو بازیاب کرالیا اور ملزمان جاوید ، عمران پسران عبدالخالق قوم شنواری ساکن پشاور حال کوئٹہ اوران کی والدہ زرمینہ زوجہ عبدالخالق کو گرفتار کر کے تھانہ تھوتھال لے آئے جہاں پر مزید تفتیش جاری ہے ، سارے کیس کی نگرانی SSPمیرپور عرفان سلیم راجہ کر رہے ہیں ، شہریوں نے اغواء کی اس بڑی واردات اور ملزمان کے چنگل سے مغویہ کو بازیاب کرانے پر پولیس ٹیم کومبارکبادپیش کی ہے
Scroll To Top