ہم ہی قتل ہورہے ہیں، ہم ہی زخمی ہورہے ہیں، ہم ہی سے پرامن رہنے کی اپیلیں کی جاتی ہیں:علی گیلانی

Syed ali gelani

سری نگر(یو این پی) کل جماعتی حریت کانفرنس گ کے چیئرمین سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ اس خطہ ارض میں بھارتی فورسز کے ہاتھوں قتل وغارت گری میں کوئی کمی نہیں آرہی ہے اور زخمیوں کی تعداد میں روزبروز اضافہ ہورہا ہے جو پوری دنیا میں امن کے علمبرداروں کے لیے ایک چلینج کی حیثیت رکھتا ہے۔وہ مشترکہ مزاحمتی قیادت کے مجوزہ پروگرام یو این او چلو کے موقع پر گرفتاری سے قبل میڈیا سے بات چیت کررہے تھیچیئرمین نے کہا ہم ہی قتل ہورہے ہیں، ہم ہی زخمی ہورہے ہیں، ہم ہی ظلم وستم کا ہر تیر سہہ رہے ہیں اور ہم ہی کو پرامن رہنے کی اپیلیں کی جاتی ہیں۔ ہمارے یہ ظالم اور بے غیرت حکمران بندوق اور بارود استعمال کرنے والوں کو امن کے لیے نہیں کہہ رہے ہیں، کیونکہ ان کے سہارے اور ان کی ہی چھترچھایا میں یہ لوگ گلہ پھاڑ پھاڑ کر مظلوم عوام کو اپنی ساحری کے کرتب دکھاتے ہیں۔انہوں نے کہا انہیں فوجی اہلکاروں کی ہلاکتیں اتنی شرمندہ کرتی ہیں کہ مسلمان کہنا بھی ان لوگوں کو بارگراں گزرتا ہے، لیکن 60سے زائد شہادتیں، بینائی سے محروم معصوم نوجوان اور 8ہزار سے زیادہ زخمیوں سے نہ تو ان کی مسلمانیت پر کوئی فرق پڑتا ہے اور نہ ہی ان کے حکمرانی کے دعوے پر کوئی آنچ آتی ہے۔گیلانی نے کہا ایسی جنگی صورتحال میں ہم دوسرے ممالک اور خاص کر اقوامِ متحدہ کو باخبر کرنا اپنا فرض سمجھتے ہیں، کیونکہ ان ہی کی منظور شدہ قراردادوں کو عملانے کے لیے ریاستی عوام پچھلے 70سال سے برسرِ پیکار ہیں۔ ہم اس ادارے سے موجودہ حالات کا جائزہ لیکر عملی اقدامات کرنے کی پرزور اپیل کرنے کی غرض سے وہاں جانا چاہتے ہیں، لیکن ہمیشہ کی طرح آج بھی پولیس اور فورسز نے ہمارا راستہ روک کر اپنے ہی قائم کردہ قوانین کی مٹی پلید کی ۔

Scroll To Top