عالمی تنظیمیں انسانی حقوق کی بے دریغ پامالیوں کو رکوانے کیلئے آگے آئیں ؛میرواعظ

Meer waiz

سری نگر(یواین پی) کل جماعتی حریت کانفرنس ع کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق نے 4 بیٹیوں کے والد منظور احمد سکونت ڈونی واری اسلام آباد(اننت ناگ)،جنہیں گزشتہ دنوں فورسز نے گولیوں سے شدید زخمی کردیا تھا ،کے جاں بحق ہونے پر انتہائی دکھ اور صدمے کا اظہار کرتے ہوئے اس قتل ناحق کی پر زور مذمت کی ہے۔ میرواعظ نے مسلسل 24دنوں سے کشمیری عوام کو بدستور شدید کرفیو اور بندشوں کی زد میں رکھ کر انہیں طرح طرح کی مشکلات اور ذہنی و جسمانی سطح پر ٹارچر کرنے خاص طور پرجنوبی کشمیر اور شہر خاص کے لوگوں کا قافیہ حیات تنگ کرنے کی سرکاری کارروائیوں کو بربریت اور آمریت کی انتہا قرار دیتے ہوئے اسے مہذب دنیا اور بین الاقوامی برداری کیلئے ایک چیلنج قرار دیا ۔انہوں نے کہا کہ اب وقت آچکا ہے کہ انسانی حقوق کی مسلمہ عالمی تنظیمیں ایمنسٹی انٹرنیشنل، ایشیا واچ وغیرہ کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق کی بے دریغ پامالیوں کو رکوانے کیلئے آگے آکر بھارتی حکومت پر اپنا دباؤ تیز کریں۔ میرواعظ نے کہا کہ کشمیر کے طول و عرض میں آزادی کا مطالبہ پوری شدت اور قوت کے ساتھ جاری ہے اور بھارتی فورسز عوامی احتجاجی لہر کو طاقت اور تشدد سے دبانے کیلئے پر امن مظاہرین پر شیلنگ اور فائرنگ کے ذریعے نہتے شہریوں کو زخمی اور ناکارہ بنا رہی ہے۔ میرواعظ نے کہا کہ گزشتہ مہینے کی 8 تاریخ سے کشمیر میں جاری عوامی احتجاج اور پر جوش مظاہروں میں روز بہ روز شدت آرہی ہے اور اس کے اثرات کا دائرہ بھی وسیع تر ہوتا جارہا ہے اور آج صورتحال یہ ہے کہ پوری ستم رسیدہ قوم ایک آواز ہوکر اپنے پیدائشی حق ، حق خودارادیت کا مطالبہ کررہی ہے اور اس ضمن میں عملا ہر طرح کی قربانیاں دینے کیلئے پیش پیش ہے ۔انہوں نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ حق و انصاف پر مبنی آزادی کی جدوجہد اور تحریکوں کو جس قدر دبانے کی کوشش کی جاتی ہے وہ اسی قدر قوت کے ساتھ ابھرتی ہے اور عوامی مزاحمت میں مزید شدت اور حدت پیدا ہوتی ہے۔

Scroll To Top