قابض بھارتی فورسز نے جولائی 2016 میں 74 کشمیریوں کو شہید کر دیا

KAshmir

سری نگر(یوا ین پی) قابض بھارتی فورسز نے جولائی 2016 میں 74 کشمیریوں کو شہید کر دیا ہے اس دوران5500 افرادشدید زخمی ہوگے جبکہ 605 شہریوں کو گرفتار کر لیا گیا جبکہ بھارتی فورسز نے تلاشی مہم کے دوران گھروں میں گھس کر 60 خواتین کو بے آبرو کر دیا ادھر پیر کے روز بھی مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کے باوجود شہریوں نے احتجاجی ہڑتال کی جلسے جلوس اور مظاہرے کیے جبکہ کشمیری خواتین نے پیر کو کشمیر کی آزادی اور شہدا کے لیے دعائیہ مجالس منعقد کیں ۔ تفصیلات کے مطابق سری نگر میں عید گاہ علاقے میں واقع مزار شہدا پر لوگوں نے سخت ترین پابندی کے باجود پہنچ کر جاں بحق افراد کے حق میں فاتحہ خوانی اور خراج پیش کیا ۔اس دوران کئی مقامات پر لوگوں نے عصر نماز سڑک پر ادا کی جبکہ جاں بحق افراد کے حق میں غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی ۔جو گی لنکر رعناواری میں لوگوں نے سڑک پر نماز عصر ادا کی اور جاں بحق افراد کے حق میں غائبانہ نماز جنازہ ادا کی ۔ رعناواری میں ہفتہ اور اتوار کی درمیانی رات کے دوران اس وقت احتجاجی مظاہرے بھڑک اٹھے جب ایک پولیس پارٹی نے متعدد مکانوں پر چھاپے ڈالے۔نوجوانوں کی گرفتاری کے خلاف مساجد کے لوڑ اسپیکروں پر احتجاج کا اعلان کیا گیا جس کے ساتھ ہی سینکڑوں کی تعداد میں مرد و زن نے سڑکوں پر نکل کر احتجاج کیا۔ بعد میں احتجاجی لوگوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپیں ہوئیں جس کے دوران سیکورٹی فورسز نے پتھراو کے مرتکب احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے آنسو گیس کے گولے داغے۔ سرینگر میں شبانہ احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری رہا جبکہ بٹہ مالو میں احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے فورسز اور پولیس نے پیلٹ بندوق کا استعمال کیا جس میں2نوجوان زخمی ہوئے۔شہر خاص کے صفا کدل،نواکدل اور کاوڈارہ میں بھی احتجاجی مظاہرین اور فورسز کے درمیان خشت باری کے واقعات رونما ہوئے جبکہ مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے ٹیر گیس گولوں کا استعمال کیا۔ معلوم ہوا ہے کہ فورسز کی جوابی کاروائی کے دوران4افراد زخمی ہوئے،نوہٹہ اور رعناواری،نائد یار،شیراز سنیما اور سعدہ کدل میں بھی احتجاجی جلوس برآمد ہونے کی اطلاعات موصول ہوئیں جس کے دوران سنگبازی کے واقعات رونما ہوئے۔نٹی پورہ اور نوگام میں بھی پولیس اور احتجاجی نوجوانوں کے درمیان جھڑپیں ہوئی جو وقفے وقفے سے د ن بھر جاری رہی۔ادھر صورہ میں اس وقت4نوجوان زخمی ہوئے جب احتجاجی جلوس برآمد ہونے کے بعد فورسز،پولیس اور احتجاجی مظاہرین گھتم گھتا ہوئے اور ایک دوسرے پر شدید سنگبازی کی۔معلوم ہوا ہے کہ جب سنگبازی انتہا کو پہنچی تو فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ٹیر گیس اور پیلت بندوق کا استعمال کیا جس میں4نوجوان زخمی ہوئے جنہیں صورہ میڈکل انسٹی ٹیوٹ منتقل کیا گیا۔ صورہ کے فور شور روڑ،برین اور دیگر علاقوں میں بھی احتجاجی جلوس برآمد ہوئے۔ سرینگر کے مضافات میں لاوئے پورہ میں سہہ پہر کو فورسز اور احتجاجی نوجوانوں کے درمیان جھڑپیں ہوئی جس کے دوران طرفین میں خشت باری ہوئی جبکہ فورسز کی جوابی کاروائی میں2نوجوان زخمی ہوئے جنوبی کشمیر مختلف علاقوں سے ہزاروں کی تعداد میں لو گ گاڑیوں میں سوار ہو کر یا پیدل چل مزار شہداکریم آباد پلوامہ پہنچے اور یہاں انہوں نے جاں بحق نوجوانوں کے حق میں فاتحہ خوانی کی اور دعائیہ مغفرت کی ۔ لوگوں نے یہاں مدفون مقامی جنگجو نوجوانوں کے مقبروں پر گلباری بھی کی جبکہ مزار شہداکے چاروں اطراف بڑے بیننر نصب کئے گئے ۔ کریم آباد کے علاوہ نیوہ ، ترال ، اونتی پورہ ، راجپورہ ، رمہو اور دیگر علاقوں سے بڑی تعداد میں لوگ یہاں پہنچے اور انہوں نے مشترکہ دعائیہ مجلس میں شرکت کی۔ مقامی سطح پر یہاں لوگوں کیلئے کھانے پینے کا انتظام کیا گیا تھا۔ کریم آباد پلوامہ میں منعقد ہوئی دعائیہ مجلس میں شرکت کیلئے آنے والے لوگوں کو پانی ، دودھ ، جوس اور دیگر مشروبات کے علاوہ مخصوص کشمیری پکوان، تہری بھی دی گئی۔نمائندے کے مطابق اسی طرح کے جلوس لتر پلوامہ میں بھی برآمد کئے گئے جہاں مختلف علاقوں سے لوگوں نے آکر مزار شہداپر حاضری دی اور گلباری بھی کی گئی جبکہ اس دوران جلوسوں میں شامل شرکااسلام و آزادی کے حق میں نعرہ بازی کر نے کے علاوہ سبز ہلالی پرچم بھی لہرا رہے تھے۔نمائندے کا کہنا ہے کہ جلوس میں شامل لوگوں کیلئے جگہ جگہ مشروبات کا انتظام کیا گیا تھا۔پلوامہ کے ٹہاب میں بھی صبح نوجوانوں نے احتجاجی جلوس برآمد کیا اور بعد میں نرہ بازی کرتے ہوئے کیمپ تک پہنچ گئے جہاں پر فورسز کے ساتھ سنگبازی و جوابی سنگبازی کا سلسلہ کچھ دیر تک جاری رہا جبکہ مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے فورسز نے ٹیر گیس کے گوالے داغے جس کی وجہ سے مظاہرین منتشر ہوئے۔پلوامہ کے کئی علاقوں جن میں مین چوک ،کاکا پورہ وغیرہ شامل ہیں ،نوجوانوں اور فورسز کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں ،جس دوران نوجوانوں نے فورسز پر خشت باری کی جبکہ جوابی کارروائی میں فورسز نے ان پر ٹیر گیس شلنگ کی ۔

Scroll To Top