بیرسٹر سلطان نے جماعتی ٹکٹ اور عہدے بیچے،رقم کا لین دین ان کے دو ملازم نما فرنٹ مین ظفر انور اور سرادر امتیاز نے کیا:خورشید عباسی کا انکشاف

khorshied abbasi

مظفرآباد(بیورو رپورٹ) پی۔ٹی۔آئی نظریاتی آزاد کشمیر کے صدر خورشید احمد عباسی نے بیرسٹر سلطان کے خلاف پہلا انکشاف کردیا۔پی ٹی آئی نظریاتی آزاد کشمیر کے صدر خورشید احمد عباسی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ آج حسب وعدہ7میں سے پہلا ا نکشاف کر رہا ہوں۔اب روز ایک راز سے پردہ اٹھاوں گا بیرسٹر سلطان تیاری کر لیں۔پی۔ٹی۔آئی نظریاتی آزاد کشمیر کے صدر خورشید احمد عباسی نے انکشاف کرتے ہوئے کہا بیرسٹر سلطان نے پی ٹی آئی کے ٹکٹ اور عہدے بیچے،رقم کا لین دین ان کے دو ملازم نما فرنٹ مین ظفر انور اور سرادر امتیاز کے ذریعے ہوا۔مظفرآباد ڈویژن کے ٹکٹوں کی قیمت 12جون کو سرینہ ہوٹل میں وصول کی گئی جس کے ثبوت موجود ہیں۔آزاد کشمیر بھر سے ٹکٹ کے لیے پارٹی فنڈ کے نام پر قیمت وصول کی گئی۔ٹکٹ کی قیمت 20لاکھ سے 25لاکھ وصول کی گئی۔ حلقہ کوٹلہ کا ٹکٹ 25لاکھ میں فروخت کیا گیا۔ رقم کا لین دین اور قیمت کا تعین مظفرآباد دویژن سے تعلق رکھنے والے ایک وزیر کے ذریعے کیا گیا۔ شاہ محمود قریشی، اسدعمر،سیف اللہ نیازی اور دیگر کو کشمیر پی۔ٹی۔آئی کے معاملات سے دور رکھنے کا مقصد ہی لوٹ مار تھا۔ شیخ رشید نے بھی اسی وجہ سے بیرسٹر سلطان پر ٹکٹ بیچنے کا الزام لگایا۔ بیرسٹر سلطان کے فرنٹ مین نے کوٹلہ کے ٹکٹ اور مرکزی عہدے کے لیے مجھ سے پارٹی فنڈ کے نام پر20لاکھ کی ڈیمانڈ کی ۔ بیرسٹر سلطان نے گزشتہ ایک سال میں متعد بار مجھے آفرز دیں۔چپ رہنے کے لیے عہدے،ٹکٹ کا لالچ دیا اور نا معلوم فرشتوں کے ذریعہ دھمکانے کی بھی کو شش کی مگر میرے ضمیر نے گوارا نہیں کیا کہ گندے کردار کے حامل آدمی کے سامنے سر جھکاوں۔مشکل حالات میں پارٹی میں نا انصافی کے خلاف بھر پور جدوجہد کی مشکل وقت کے ساتھیوں پر فخر ہے وہی کچھ لوگ حقیقی نظریاتی اور آزاد کشمیر میں پی۔ٹی۔آئی کے چمکتے ستارے ہیں جو عمران خان کے وژن کی روشنی میں اپنی سیاسی جدوجہد کو آگے بڑھا رہے ہیں۔پرانی پی۔ٹی۔آئی کے وہ لوگ جو خود کوبانی کہتے ہیں ان کا کردار بیرسٹر سے زیادہ بھیانک ہے انہوں نے ن لیگ کی ایماء پر پی۔ٹی۔آئی اور پی۔ٹی۔آئی نظریاتی کو ناکام بنانے کے لیے نیا گروپ بنانے کی کو شش کی جس کو کشمیر کی عوام اور پی۔ٹی۔آئی کے نظریاتی کارکنوں نے مسترد کر دیا وہ بیچارے سیاسی بیروذگار اور نا معلوم منزل کے مسافر ہیں۔

 

Scroll To Top