بھارتی فورسز نے اپریل 2016 کے دوران مقبوضہ کشمیر میں تیرہ افراد کو شہید کر دیا

shaheed

سری نگر(یوا ین پی) بھارتی فورسز نے اپریل 2016 کے دوران مقبوضہ کشمیر میں تیرہ افراد کو شہید کر دیا۔ کپواڑہ اور ہندواڑہ میں فورسز فائرنگ سے خاتون سمیت پانچ افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ۔ کپرن ڈورو شاہ آباد میں چھاپہ مار کارروائی کے دوران 60سالہ شخص اپنی جان گنوا بیٹھا۔ اس طرح اپریل مہینے میں 8عسکریت پسندوں سمیت 14افراد اپنی قیمتی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ۔ علاوہ ازیں پولیس وفورسز نے بجبہاڑہ اور راجباغ میں حزب اور لشکر طیبہ کے 7 کارکنوں کو اسلحہ سمیت گرفتار کرنے کا دعوی کیا ۔ اپریل مہینے میں جھڑپوں کے دوران تین مقامی عسکریت پسندو ں و سمیت 8عسکریت پسند جاں بحق ہوئے ۔ تفصیلا ت کے مطابق 5اپریل کو پلوامہ میں جھڑپ کے دوران مقامی عسکریت پسند بلال احمد بٹ جاں بحق ہوا جبکہ 6اپریل کو پولیس وفورسز نے مصدقہ اطلاع موصول ہونے کے بعد درد پورہ لولاب کے جنگل میں غیر ملکی عسکریت پسند کو مختصر جھڑپ کے دوران مار گرانے کا دعوی کیا 7اپریل کو پولیس وفورسز نے صبح چھ بجے کے قریب شوپیاں کے مضافاتی علاقے میں جھڑپ کے دوران حزب المجاہدین کے دو کمانڈر جن کی شناخت وسیم احمد ملہ عرف رضوان ولد محمد اقبال ساکنہ پہلی پورہ شوپیاں اور نصیر احمدپنڈت ولد غلام رسول ساکنہ کریم آباد پلوامہ کے بطور ہوئی جاں بحق ہوئے اور پولیس وفورسز نے دعوی کیا کہ جاں بحق عسکریت پسندوں کے قبضے سے بڑی مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ۔ مسلسل چار روز تک جنوبی کشمیر کے پلوامہ ، اونتی پورہ ، شوپیاں اور ترال میں مقامی عسکریت پسند وں کی یاد میں تعزیتی ہڑتال رہی جبکہ سنگباری کے دوران 40کے قریب عام شہری زخمی ہوئے ۔
Scroll To Top