محکمہ اوقاف کے ایک آفیسر پر عوام علاقہ نے بھرے مجمعے میں رشوت کا پینڈورا باکس کھول دیا

کھڑی شریف (محمد کامران چوہان سے) محکمہ اوقاف اور مقامی ابادی میں سیوریج لاہن ڈالنے کا پھڈا تحصیل دار اور پولیس موقع پر پہنچ گئی میاں طارق محمود نے محکمہ اوقاف کے اےڈی پرویز چوہدری کو کھری کھری سنا دی ۔بھرے مجمہ میں رشوت کھانے کا ذکر چھیڑ دیا تفصیل کے مطابق دربار عالیہ کھڑی شریف کے ملحقہ چنوں چک روڈ پر سیوریج سسٹم ڈالنے کے لیے کھدائی کی گئی تو اے ڈی محکمہ اوقاف پرویز چوہدری نے کھدائی کو یہ کہہ کر بھروانے کی کوشش کی کہ یہ محکمہ اوقاف کا رقبہ ہے جبکہ اہلیان دیہہ نے کہا کہ محکمے نے دربارعالیہ کھڑی شریف پر قابض ہونے کے بعد یہ راستہ درجنوں دیہات کے لیے چھوڑا تھا جوکہ اب دربارعالیہ کھڑی شریف کی چار دیواری سے باہر ہے اور شارع عام کے طور پر استعمال ہوتا ہے اور محکمہ لوکل گورنمنٹ کی اسکیم میں سیوریج سسٹم ڈالا جارہا ہے جبکہ محکمہ اوقاف نے ہماری ملکیت رقبوں سے دربارعالیہ کا سیوریج سسٹم ڈالا ہوا ہے ہم نے کوی اعتراض نہیں کیا جس پر درجنوں افراد کی موجودگی میں میاں طارق محمود اور چوہدری پرویز اے ڈی کے درمیان سخت جملوں کا تبادلہ ہوا اور میاں طارق محمود نے کہا کہ آپ ہر کام میں پیسے لیتے ہو سیوریج ڈالنے کے پیسے نہیں دے سکتے اس بات پر اے ڈی چوہدری پرویز سید پا ہونے لگے تو لوگوں نے بھرے مجمعے میں رشوت کا پینڈورا باکس کھول دیا ۔

Scroll To Top