محکمہ صحت وبائی مرض سے بچانے کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہا ہے, ارشد محمو د رتیال

میرپور (عدالت نیوز)
بیسک ہیلتھ یونٹ کاکڑہ ٹاؤن کی لیڈی ڈاکٹر محترمہ ندا حسن اور سی ڈی سی کے انچارج ارشد محمو د رتیال نے کہا ہے کہ حکومت آزادکشمیر کی ہدایت پر محکمہ صحت عامہ لوگوں کے علاج معالجہ اور انھیں مختلف وبائی مرض سے بچانے کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہا ہے۔محکمہ ہیلتھ کا کوئی بھی پروگرام کمیونٹی کے تعاون سے بغیر کامیاب نہیں ہوسکتا کورونا وائرس کی طرح ڈینگی وائرس بھی خطرناک ہے برسات کے دنوں میں ڈینگی مچھر سے علاقہ اور عوام کو بچانے کے لیے صحت و صفائی کی تدابیر پرسو فیصد عمل کیا جائے اپنے اردگرد کے ماحول کو صاف ستھرا رکھاجائے اور جہاں کہیں کوڑا کرکٹ یا گندگی کے ڈھیر ہوں ان کا خاتمہ کیا جائے۔صاف پانی کا ذخیرہ نہ ہونے دیا جائے۔پانی کی ٹینکیوں کو محفوظ بنایا جائے۔طلوع و غروب آفتاب کے وقت گھروں میں ہی رہا جائے جولائی کے آخری ہفتہ سے دسمبر تک ڈینگی سے محفوظ رہنے کے لیے مچھر مار سپرے،مچھر دانی کا استعمال کیا جائے۔
ان خیالات کا اظہار انھوں نے بیسک ہیلتھ یونٹ کاکڑہ ٹاؤن میں ڈینگی سے بچاؤ کے سلسلہ میں محکمہ صحت عامہ اور کمیونٹی کے چیدہ چیدہ افراد کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر BHUکے سی ڈی سی کے انچارج ارشد محمو د رتیال نے بتایا کہ ایڈیشنل ڈی ایچ،سی ڈی سی بھمبر میرپور کی انچارج ڈاکٹر ارم بتول کی ہدایات پر کاکڑہ ٹاؤن BHUکے ایریا میں ڈینگی مچھر کی افزائش کے خاتمہ کے لیے حفاظتی سپرے سمیت کمیونٹی کے تعاون سے صحت و صفائی کے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں تاکہ ان علاقوں میں ڈینگی مچھر کی افزائش نہ ہونے پائے انھوں نے مقامی افراد سے کہا کہ وہ اپنے گھروں محلوں اور دیگر مقامات پر صفائی و ستھرائی کے لیے خصوصی کام کریں گھروں کے اندر یا باہر صاف پانی کھڑا نہ ہونے دیں موسم برسات میں اپنے گھروں کی کھڑکیوں میں جالی کا استعمال کریں مچھر ما ر سپرے کریں اور دیگر سی ڈی سی کی طرف سے جاری کردہ حفاظتی تدابیر اختیار کریں تاکہ ڈینگی مچھر سے محفوظ رہا جاسکے۔
لیڈی ڈاکٹر نداحسن نے کہا کہ کورونا اور ڈینگی دونوں جان لیوا ء وائرس ہیں جن سے محفوظ رہنے کے لیے صفائی و ستھرائی نہایت ہی ضروری ہے اگرکسی علاقہ یا محلہ میں ڈینگی کی افزائش ہورہی ہے تو ایسے علاقوں میں سپرے کیا جائے اور ڈینگی وائرس کے خاتمہ کے لیے معاشرے کے ہر فرد کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔تقریب کے آخر میں کمیونٹی نمائندگان نے یقین دہانی کروائی کہ سی ڈی سی کی ہدایات پر سو فیصد عملدرآمد کیا جائیگا

Scroll To Top