خواتین کے میک اپ میں شامل کیمیکل , خوفناک انکشاف

news-1537104258-2473

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) شاید ہی کوئی خاتون ہو جو بیوٹی پراڈکٹس استعمال نہ کرتی ہو، لیکن اب امریکہ کی جارج میسن یونیورسٹی کے ماہرین نے ان پراڈکٹس کے متعلق انتہائی خوفناک انکشاف کر دیا ہے۔ یونیورسٹی کی ویب سائٹ chhs.gmu.edu پر شائع ہونے والی تحقیقاتی رپورٹ میں سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ بیوٹی پراڈکٹس میں جس طرح مختلف کیمیکلز ملائے جاتے ہیں وہ خواتین میں ہارمونز کے خطرناک بگاڑ کا سبب بن سکتے ہیں۔ یہ بگاڑ اتنا مہلک ہو سکتا ہے کہ اس سے خواتین چھاتی کے کینسر اور دل کی بیماریوں جیسے سنگین عارضوں میں بھی مبتلا ہو سکتی ہیں۔

تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر اینا پولاک کا کہنا تھا کہ ”ہم نے اس تحقیق میں 143خواتین کے 509یورین سیمپل لیے اور ان کے ٹیسٹ کیے۔ ان خواتین کی عمر 18سے 44سال کے درمیان تھی۔ اس تحقیق کا مقصد کیمیکلز کے آمیزوں سے خواتین کی صحت پرمرتب ہونے والے اثرات کا پتا چلانا تھا۔ نتائج میں ہمیں معلوم ہوا کہ بیوٹی پراڈکٹس میں استعمال ہونے والے کیمیکلز کے آمیزے خواتین کے ہارمونز میں شدید بگاڑ کا سبب بنتے ہیں۔ جو دیگر مہلک بیماریوں کے ساتھ ساتھ ان کی افزائش نسل کی صلاحیت پر بھی اثرانداز ہوتے ہیں، کیونکہ اس بگاڑ سے ان کے تولیدی ہارمونز کی پیداوار بھی انتہائی کم ہو جاتی ہے۔ اس تحقیق کے نتائج میں ہم نے یہ اخذ کیا ہے کہ خواتین کو بیوٹی اینڈ پرسنل کیئر کی مصنوعات میں پائے جانے والی کیمیکلز کے متعلق محتاط رہنے کی ضرورت ہے ۔ ان میں سے ایک کیمیکل کا نام پیرابینز (Parabens)ہے جو خواتین کے ہارمون ایسٹروجن کی مقدار کو انتہائی بڑھا دیتا ہے اور یہ صورتحال چھاتی کے کینسر پر منتج ہوتی ہے۔“

Scroll To Top