پیپلز پارٹی نے خزانے کاغلط استعمال کیا،لیبرقوانین پرعملدرآمد کو یقینی بنایاجائے گا:نورین عارف،چوہدری سعید

ch-saeed

میرپور(نمائندہ عدالت)آزادکشمیرکی وزیرصنعت وحرفت ،ٹیوٹا ، سماجی بہبود، ترقی نسواں، AKMIDC و سمال انڈسٹریز محترمہ نورین عارف نے کہاہے کہ خوشحال کشمیرہی مضبوط پاکستان کی ضمانت ہے۔ میرپوروالوں نے دومرتبہ اپنے آباؤاجداد کی قبروں کی قربانیاں دے کرہمارے سر فخرسے بلند کردیئے ہیں۔ انڈسٹری اورمزدور کاآپس میں چولی دامن کا ساتھ ہے۔ مزدور کی خوشحالی سے انڈسٹری کی ترقی وابستہ ہے۔ ہم گلوبل پارٹ کا حصہ ہیں۔ اندرون ملک اور بیرون ملک لیبرز کوجوحقوق حاصل ہیں آزادکشمیرمیں لیبرز قوانین پرخصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ صنعتیں اگرترقی کا ستون ہیں تو مزدور کو ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت حاصل ہے۔ چائلڈ لیبر بھی ایک ایشوہے۔ لیبرقوانین پرعملدرآمد کو یقینی بنایاجائے گا۔ انڈسٹری وہ ہتھیار ہے جس سے بے روزگاری کا جن قابوکیاجاسکتاہے۔ لیبرز قوانین کو مدنظررکھتے ہوئے حکومت آزادکشمیر نے مزدور کی ماہانہ اجرت 14 ہزار مقرر کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کرکے گڈگورننس کا دعویٰ اپنے نام کیاہے۔ کارخانوں کو چلانے کے لیے بجلی اور گیس دونوں انتہائی ضروری ہیں لوڈ شیڈنگ کے کم ہونے سے انڈسٹری ترقی کرے گی اور بے روزگار لوگوں کو نوکریاں ملیں گی ۔ انڈسٹری وہ امید کی کرن جس سے ناخواندہ کا روزگاربھی وابستہ ہے۔ متوسط طبقہ پر توجہ دی جارہی ہے۔ وزیراعظم پاکستان میاں محمدنوازشریف کاترقی کا ویژن مخالفین کوہضم نہیں ہورہا۔ پاکستان مسلم لیگ ن کی قیادت اور وزیراعظم راجہ محمدفاروق حیدر خان پر اعتمادکا اظہار کرتے ہوئے کشمیری عوام نے جو بھاری مینڈیٹ دیاہے اس کے مثبت اثرات لوگوں تک پہنچ رہے ہیں۔ این ٹی ایس کا نفاذ عمل میں لاکر گڈگورننس کے وعدے کو سچ ثابت کیاہے۔ متنازعہ پبلک سروس کمیشن کی تحلیل کرکے ادارہ کی گرتی ہوئی ساکھ کو بچایاہے۔ پبلک سروس کمیشن میں اچھے کردار کے حامل افراد پر مشتمل بورڈ بنایاجائے گا۔ وزیراعظم پاکستان کا یہ نعرہ” بدلاہے پاکستان بدلیں گے کشمیر” نعرے کی تکمیل کرنے وزیراعظم مظفرآباد آکرکشمیریوں کی تقدیر بدل دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے آل ایمپلائزلیبریونین ایسوسی ایشن میرپورکے زیراہتمام منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب سے ڈائریکٹرٹیوٹاراجہ ذیشان عارف، ڈائریکٹرلیبرویلفیئر سید اصغرعلی شاہ، ایم ڈی اے ایمپلائز یونین کے صدر لالہ قیوم، صدرمیرپورایمپلائز یونین منشاء قریشی، ایپکاکے مرکزی جنرل سیکرٹری رشید خان اور ضیاء منہاس نے بھی خطاب کیاجبکہ اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹرانڈسٹری راجہ غٖضنفرعلی، انفارمیشن آفیسر سردارمحمداکمل خان، یونس مغل اور دیگر بھی موجود تھے۔ وزیرصنعت محترمہ نورین عارف نے کہاکہ بجلی اور گیس کی لوڈشیڈنگ کو کم کرکے بیمار صنعتی زون کو ٹریک پر لایاجائے گا۔ انڈسٹری کو اہم ستون ہونے کی وجہ سے خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ مزدوروں کی ویلفیئرپرخصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ انڈسٹری زون میں سکولزاور ہسپتال بناکرمزدوروں کی فلاح وبہبود کے لیے کام کیاجارہا ہے۔انھوں نے کہاکہ سرکاری اور پرائیویٹ اداروں میں فرق ختم کردیں گے۔ اپوزیشن کو چاہیے کہ وہ شریف برادران کو کام کرنے کا موقع دی دھرنے ، جلسے اورجلوسوں کی سیاست سے گریز کریں۔ تنقید کی بجائے اسمبلی کے فورم کا استعمال کریں۔ ہڑتال کرنے والوں کو سوچنا چاہیے کہ وہ ملک کی کون سے خدمت کررہے ہیں ۔ یہ لوگ ملک کو شدید نقصان پہنچارہے ہیں ۔ دھرنے اور ہڑتال کی زد میں آکر کئی مریض سڑک پر ایمبولینس میں سسک سسک کردم توڑ دیتے ہیں۔ آزادکشمیرکی معاشی اوراقتصادی ترقی پر بھرپو ر توجہ دے رہے ہیں۔ پیپلزپارٹی کی سابقہ حکومت سے22 ارب روپے کا مالی خسارہ ہماری حکومت کو ورثے میں ملا۔ گذشتہ پانچ سالہ دور میں حکومت نے خزانے کاغلط استعمال کیا۔ ہماری حکومت شروع دن سے عوام کے بنیادی مسائل پرتوجہ دے رہی ہے۔ وزیراعظم پاکستان میاں محمدنوازشریف پاک چائنہ اقتصادی راہداری کے ثمرات کشمیری عوام تک پہنچانے کے لیے خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں جس سے آزادکشمیرمیں ترقی ہوگی اور بے روزگار نوجوانوں کو بھی روزگار کے بہترمواقع میسر آئیں گے۔
Scroll To Top