چڑھوئی میں حادثے کا شکار نہم جماعت کا طالبعلم زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا

death-body

میرپور(نامہ نگار)علاقہ چڑہوئی کی ممتاز سیاسی وسماجی اور مذہبی شخصیت راجہ رنگباز خان کا پوتا اور راجہ ضروب خان آف سروٹی چک والوں کا جواں سالہ بیٹا گورنمنٹ ہائی سکول جوناجماعت نہم کاطالبعلم راجہ فیصل ضروب جوگذشتہ روزگاڑی نمبرJGI-296 کے نیچے آکر شدید زخمی ہوگیاتھا جسے کوٹلی ہسپتال کے بعد اسلام آباد لے جایاگیاجو جانبرنہ ہوسکا۔ طالبعلم فیصل ضروب کی موت کی جونہی خبران کے گھر پہنچی تو علاقہ میں کھرام مچ گیا ۔ ہرفرد کی آنکھ عشکبار تھی مرحوم کے والدین اور عزیز واقارب دھاڑیں مارمارکررورہے تھے۔مرحوم کی نماز جنازہ ان کے آبائی گاؤں چک سروٹی میں ادا کی گئی۔نماز جنازمولاناعبدالرشید نقشبندی نے پڑھائی۔ نماز جنازہ میں مسلم لیگ ن کے مرکزی راہنماو سابق امیدوار اسمبلی راجہ منور خان، صدربار چڑہوئی راجہ محمد اکبرخان ایڈووکیٹ، پروفیسر فیاض راجا، ہیڈماسٹر سرداررزاق خان، سابق چیئرمین راجہ ممتاز خان، سابق چیئرمین راجہ محمدطفیل خان، اے ای او راجہ محمدعزیز خان ،علماء مشائخ کے سابق ممبرمولانا مبارک حسین طاہر، سابق چیئرمین چوہدری محمدصابر، راجہ ولید ایڈووکیٹ، انفارمیشن آفیسر محمد جاوید ملک، پرنسپل راجہ محمد عجائب خان، پروفیسرشہپال راجہ، حاجی چوہدری محمدسلیمان، ہیڈماسٹرراجہ مطلوب قمر، محکمہ تعلیم سے وابستہ اساتذہ، طلباء اور زندگی کے ہرمکتبہ فکرسے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔ یاد رہے کے فیصل ضروب راجہ جو گورنمنٹ ہائی سکول جونامیں جماعت نہم کا طالبعلم تھا گذشتہ روز سکول جانے کی غرض سے روڈ پر کھڑا تھاکے مسافر بس نمبرJGI-296نے منشی موڑ کے قریب فیصل ضروب کو نیچے دے کرشدید زخمی کردیاتھا اور بعد ازاں فیصل ضروب زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے خالق حقیقی سے جاملا۔ مرحوم کے تعزیتی ریفرنس سے مقررین نے خطاب کرتے ہوئے ضلعی اور تحصیل انتظامیہ سے مطالبہ کیاکہ وہ پبلک ٹرانسپورٹ کے ڈرائیوروں کو ٹریفک قوانین کا پابندکریں۔ طالبعلم فیصل ضروب کی ہلاکت ڈرائیور کی غفلت اور لاپرواہی کے باعث ہوئی ہے۔ ڈرائیوروں کی اس طرح کی غفلت اور لاپرواہی کو روکنا ضلعی اور تحصیل انتظامیہ کی ذمہ داری ہے۔ مقررین نے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ کیاکہ وہ سکول اور کالجز ٹائم کے دوران پبلک ٹرانسپورٹ کے ڈرائیوروں کو پابندبنائیں کہ وہ طالبعلموں کو بسوں اورگاڑیوں میں بٹھانے اوراتارنے کے وقت ذمہ داری کاثبوت دیں۔ مقررین نے ورثاء کے ساتھ گہری ہمدردی کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ طالبعلم فیصل ضروب نہایت ہی شریف النفس طالبعلم تھاجوپنجگانہ نماز کاپابند تھا۔
Scroll To Top