جھوٹیFIR،کاروبار پر حکم امتناعی،بجلی، پانی کے کنکشن منقطع،تارک وطن تاجر ڈڈیال میں خوار

dadyaal

ڈڈیال(بیورورپورٹ)لیگی راہنماؤں کے سرکاری دفاتر میں ڈیرے تو پہلے ہی سے تھے مگر اب ان کی کاروائیاں بھی عروج پر، عام سائلیں پریشان حال، افسران تبادلے کے ڈر سے سائلیں کو پریشان کرنے لگے، اے سی آفس، تحصیلدار آفس،تھانہ، محکمہ برقیات سمیت دیگر محکموں میں بھی لیگی راہنما صبح افسروں کے پہنچنے سے پہلے ہی دفتروں میں پہنچ جاتے ہیں۔پاکستانی نژاد برطانوی نوجوان چوہدری عرفان کو انگلینڈ سے پاکستان آکر ڈڈیال میں سرمایہ کاری کرنا مہنگا پڑھ گیا 2جھوٹی ایف آئی آر،کاروبار پر حکم امتناعی،بجلی اور پانی کے کنکشن بھی کاٹ دیے انگلینڈ سے پیسہ لا کر اپنے وطن میں سرمایہ کاری کرنا نوجوان کا جرم بن گیاڈڈیال انتظامیہ نے لیگی کھڑپینچوں کے آگے گھٹنے ٹیک دیے جی ایچ کیو کہ ملازم اور لیگی کھڑپینچوں کے دباؤ میں آکر ڈڈیال انتظامیہ اور پولیس نے پاکستانی نژاد برطانوی نوجوان پر زمین تنگ کر دی ڈڈیال سے تعلق رکھنے والے نوجوان چوہدری عرفان نے پر ہجوم پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ میں نے سوچا تھا کہ اپنے آبائی علاقہ ڈڈیال میں انگلینڈ سے پیسے لا کرسرمایہ کاری کروں گا تو حکومت اور ادارے مجھے عزت دیں گے مگر حقیقت اس سے برعکس ثابت ہوئی میں نے جب سے ڈڈیال میں ایک کرائے کی بلڈنگ میں ہوٹل قائم کیا ہے تب سے میرے خلاف کاروائیاں جاری ہیں میرے خلاف 2ناجائز ایف آئی آر درج کی گئی مجھے 2بار تھانہ میں بند کر کے شدید ذہنی اذیت دی گئی بلڈنگ مالک ڈاکٹر اکرم ہاشمی نے میرے ہوٹل کا پانی اور بجلی بند کر کے مجھے بلیک میل کرنا شروع کر دیا ہے تارکین وطن سے کہتا ہوں کہ وہ پاکستان یا آزاد کشمیر میں سرمایہ کاری نہ کریں یہاں سرمایہ کاری کرنے والوں کو جھوٹے کیس بھگتنے پڑتے ہیں ڈڈیال انتظامیہ اکرم ہاشمی مرحوم کی فیملی کی پوری سپورٹ کر رہی ہے بلڈنگ مالک ڈاکٹر ہاشمی کے ساتھ ایگریمنٹ کے مطابق ہوٹل 2019تک میں چلاؤں گا مگر جب انہوں نے دیکھا کہ میرا ہوٹل کا کام ٹھیک چل رہا ہے تو انہوں نے مجھے تنگ کرنے کیلئے کرایہ 70ہزار سے 90ہزار کر دیا میں وہ کرایہ بھی ہر ماہ ادا کرتا رہا اس کے بعد اکرم ہاشمی نے میرے ایک پرانے چیک پر میرے خلاف جھوٹی ایف آئی آر کٹوا دی جبکہ اکرم ہاشمی کے پاس ایڈوانس کی مد میں میرے 19لاکھ روپے نقد پڑے ہوئے ہیں اس دوران ڈاکٹر اکرم ہاشمی کے ایک داما کرنل معاذ نامی نے مجھے اپنی اپنے گن مینوں کے ساتھ اسلح سے لیس ہو کر دھمکیاں دی جس کی رپورٹ میں نے چیئرمین جائنٹ چیف آف سٹاف،آرمی چیف، آئی ایس آئی چیف،کورکمانڈر راولپنڈی سمیت دیگر اداروں کو خط لکھے جس پر کاروائی کی امید ہے چوہدری عرفان نے کہا کہ گزشتہ دنوں ڈاکٹر اکرم ہاشمی مرحوم کے بیٹے نبیل اکرم نے ہوٹل میں آکر میرے والد کے ساتھ شدیدی بد تمیزی کی اس معاملہ کی رپورٹ کرنے کیلئے جب میں تھانہ گیا تو تھانے میں موجود ایس ایچ او راجہ الیاس اور ایڈیشنل ایس ایچ او جاوید الرحمن نے میری درخواست پر کاروائی کرنے کے بجائے الٹا مجھے تھانے میں بٹھا لیا وہ 6گھنٹے تک مجھ پر دباؤ ڈالتے رہے اور ہوٹل خالی کرنے کا کہتے رہے میرے صاف انکار پر انہوں نے 6گھنٹے بعد میرے خلاف جھوٹی ایف آئی آر کاٹ دی چوہدری عرفان نے کہا کہ میرے کیس عدالت میں چل رہے ہیں مجھے عدالت سے انصاف کی توقع ہے انہوں نے ملکی سلامتی کے تمام اداروں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ میرے ساتھ انصاف کیا جائے۔

Scroll To Top