سرکاری ملازمین سے گپیں نہیں لگاتا نہ ہی انہیں گالیاں دیتا ہوں ،پورے آزادکشمیر کی تعمیر و ترقی الگ اور میرپور کو الگ دیکھوں گا :وزیر اعظم

pm

مظفرآباد (پی آئی ڈی) وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ سرکاری ملازمین سے گپیں نہیں لگاتا نہ ہی انہیں گالیاں دیتا ہوں آزادکشمیر کی بیوروکریسی پر فخر ہے مگر اچھے برے لوگ ہر جگہ موجود ہیں ،احتساب سب کا ہو گا مگر کسی سے سیاسی انتقام نہیں لیں گے متاثرین زلزلہ کے نام پر آنے والے پیسوں سے بنے وزیراعظم ہاؤس میں نہیں رہوں گا ،آزادکشمیر کے اندر امراض قلب کے حوالے سے مثالی ہسپتال بنائیں گے ،عوام کا پیسہ عیاشیوں کے بجائے انہی پر خرچ کریں گے ،قومی خزانے کے امین ہیں ،ایک ایک پائی کا دنیا و آخرت میں حساب دینے کے پابند ہیں ،سرکاری خرچے پر ذاتی کام نہیں ہوں گے ،پورے آزادکشمیر کی تعمیر و ترقی الگ اور میرپور کو الگ دیکھوں گا ،میرپور کے لوگوں نے قربانیاں دیں وہ متاثرین کا شہر ہے ،وہاں کے اداروں کو مثالی بنانے کے ساتھ ساتھ وہاں سیاحت کے فروغ کے لیئے خصوصی اقدمات کریں گے ،ڈوڈیال میں ایک بڑا ہسپتال بنائیں گے ،ایم ڈی اے اور دیگر اداروں میں جو کرپشن ہوئی اس پر ہاتھ ڈالنے کا وقت آگیا ہے ،کوئی بیوروکریٹ میرا عزیز نہیں نہ ہی کوئی چہتا بنا ہے اگر کوئی یہ سوچتا ہے تو اسے پتہ چل جائے گا ،میرپور کے شہر یوں کو پینے کے صاف پانی کی 24گھنٹے فراہمی یقینی بنائی جائے گی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو اور ایوان وزیراعظم میں آزادکشمیر بھر سے آئے وفود سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ،وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ ٹیم بن کر کام کر رہے ہیں لوگوں کی مشکلات کا احساس ہے آزاد کشمیر کے اندر جلد تبدیلی زمین پر نظر آئیگی ،میاں محمد نواز شریف کے سپاہی ہیں عام حالات میں حکومت نہیں ملی کارکنوں کو یقین دلاتے ہیں انہیں مایوس نہیں کریں گے سرکاری دفاتر عوام کی سہولت کے لیئے ہیں مجھ سمیت تمام وزراء ،سرکاری آفیسران ،اہلکاران عوام کے خادم بن کر کام کریں وزیراعظم نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت آزادکشمیر کے عوام اور پسے ہوئے طبقات کی حکومت ہے اور اقتدار عوام ہی کی امانت ہے اس میں خیانت نہیں کر سکتے ہمارا اقتدار اور آزادکشمیر کا سیٹ اپ بڑی قربانیوں کے بعد ملا ہے ،مقبوضہ کشمیر اور لائن آف کنٹرول پر قربانیاں دینے والوں کو فراموش نہیں کرسکتے ہیں یہ حکومت شہداء کی وارث ہے آزادکشمیر کے اندر ترقی اور خوشحالی لانی ہے ،ہمیں عام حالات میں حکومت نہیں ملی اداروں میں شفافیت کے لیئے تمام ذرائع بروئے کار لائیں گے انہوں نے کہا کہ سرکاری دفاتر میں عوام کے لیئے آسانیاں پیدا ہونی چاہیے نہ کہ مشکلات ،کونسل الیکشن کے بعد کچھ لوگوں کے پیٹ میں مروڑ اٹھ رہے ہیں سرمایہ کاروں کو شکست اور کارکنان کی فتح ہوئی ہے عبدالخالق وصی اور صدیق بٹلی سرمایہ کاری سے ممبر نہیں بنے بلکہ پارٹی قیادت کے ساتھ مظبوط وابستگی اور غیر مشروط وفاداری کے صلے میں بنے ہیں اور یہ دیگر کارکنوں کے لیئے مثال ہے وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ عہدے کی توہین نہیں ہونے دوں گا میاں نواز شریف نے جس اعتماد کا اظہار کیا اس پر پورا اتریں گے پارلیمانی پارٹی میں وزارت کے خواہشمند لوگ نہیں مہاجرین جموں وکشمیر ہماراحصہ ان کے مسائل حل کرنا ہماری ذمہ داری ہے انہوں نے کہا کہ یہ حکومت عام آدمی کی حکومت ہے اشرافیہ کی نہیں#
Scroll To Top