ہندوستان کشمیر میں نان اسٹیٹ ایکٹر ہے جسکا کشمیر سے کوئی لینا دینا نہیں:وزیر اعظم آزادکشمیر

pm

مظفرآباد (پی آئی ڈی ) وزیر اعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ دشمن ہماری سرحدوں کو غیر محفوظ بنا نا چاہتا ہے جبکہ کچھ لوگ پانامہ لیکس کو سب سے بڑا مسئلہ قرار دیتے ہیں ۔ میڈیا کو اپنی ترجیحات کا تعین کرنا چاہیے ۔ملکی سلامتی سے آگے بڑھ کر کوئی چیز نہیں ۔ افسوس کی بات ہے کہ لوگ نیوز چینلز پر تفریح تلاش کرتے ہیں ۔ کشمیری تھکنے والی قوم نہیں ۔ہندوستان مقبوضہ کشمیر کے اندر دہشتگردی کررہا ہے ۔ پاکستان اور کشمیر ایک ہیں ہمیں آپس میں کوئی الگ نہیں کر سکتا۔ جنرل راحیل شریف کی ملک کیلئے خدما ت پر سرینگر سے لے کر مظفرآباد تک کے کشمیریوں کو فخرہے ۔ راحیل شریف نے ملک کے اندر اور باہر سیکورٹی چیلنجز کا جس انداز سے مقابلہ کیا اس کی مثال ملنا مشکل ہے۔ ان کی قیادت میں پاکستان کے اندر آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشتگردوں کی کمر ٹوٹی ۔مسلح افواج پاکستان کشمیر یوں کی جان ومال اور عزتوں کی محافظ جبکہ ہندوستانی ناپاک افواج ان کی توہین کررہی ہے۔ ہمار ا جینا مرنام، ہمارے تمام قدرتی راستے اور دریاؤں کا رخ پاکستان کی طرف ہے اسی لیے مرد درویش حضرت قائد اعظم محمد علی جناح ؒ نے کشمیرکو پاکستان کی شہہ رگ کہا تھایہ اگر دشمن کے قبضہ میں ہے تو پاکستان کیلئے شدید مشکلات رہیں گی ۔ کشمیری کسی صورت ہندوستان کو مقبوضہ کشمیر میں نہیں رہنے دیں گے۔ ہندوستان کشمیر میں نان اسٹیٹ ایکٹر ہے جسکا کشمیر سے کوئی لینا دینا نہیں۔ پاکستانی وکلاء برادری کی کشمیرکاز کیلئے خدمات لائق تحسین ہیں ۔پاکستان کے اندر بسنے والے لوگ پیدائشی پاکستانی جبکہ ہم اپنی مرضی اور منشاء کے مطابق پاکستان کا حصہ بننا چاہتے ہیں ۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے لاہور ہائی کورٹ کے بار کے اراکین کے اعزاز میں اپنی جانب سے دئیے گئے عشائیے اور مختلف وفود سے بات کرتے کرتے ہوئے کیا۔ وزیر اعظم آزاد کشمیر نے کہا کہ پاکستان کی ترقی ، خوشحالی اور مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ایک جمہوری طور پر مستحکم پاکستان ناگزیر ہے ۔ یہ ملک انارکی کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ عوامی رائے کو مقدم اور مقدس سمجھا جانا چاہیے۔ قانون سے کوئی بھی شخص بالا تر نہیں ۔ وکلاء نے پاکستان کے اندر جمہوریت کے استحکام ، عدلیہ کی آزادی اور انسانی حقوق کی حفاظت کیلئے تاریخ ساز جدوجہد کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور آزاد کشمیر کے وکلاء کے درمیان رابطے اشد ضروری ہیں ، حکومت آزاد کشمیر اس حوالہ سے تمام تر سہولیات فراہم کرے گی۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ پاکستان کے اندر گزشتہ 08سالوں میں جمہوریت مستحکم ہوئی ہے ۔ جنرل راحیل شریف کی خدمات پر انہیں لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف کے کشمیریوں کی جانب سے خراج تحسین پیش کرتا ہوں ۔ انہوں نے ملکی سیاسی قیادت کے ساتھ مل کر دشنموں کے عزائم کو خاک میں ملایا۔ پاکستان کی تاریخ کے اندر ان جیسے نام انگلیوں پرگنے جا سکتے ہیں جنہوں نے اجتماعی مفاد اور عوام رائے عامہ کو بلڈوز کرنے کے بجائے ہمیشہ اس کی پاسدای کی ۔ جنرل راحیل شریف کا دور پاکستان کے عسکری تاریخ کے سنہری ادوار میں شمار ہوگا۔ ان کی خدمات کا اعتراف پورا پاکستان بلا شرکت غیر دل کھول کر جس والہانہ انداز سے کررہا ہے وہ ان کے پیشرؤں سمیت ہم سب کیلئے مشعل راہ ہے۔اس موقع پر صدر لاہور ہائی کورٹ بار نے کہا کہ راجہ محمد فاروق حیدر خان ایک کردار کا نام ہیں انہوں نے آزاد کشمیر کے عوام کے حقوق کی جنگ لڑی اور جرات کے ساتھ عوامی حقوق کی جس انداز سے ترجمانی کی اس سے یہ وکلاء میں بہت مقبول ہیں ۔
Scroll To Top