سماہنی کے گاؤں ڈب لکھن پال سے تعلق رکھنے والے دھرتی کے عظیم بیٹے بھارتی فوج کی جارحیت سے شہید ہونے والے محمد تنویر کی نمازجنازہ فوجی اعزازات کے ساتھ آباؤں گاؤں میں ادا کر دی گئی

rashad-raaj

بنڈی چوکی (نمائندہ عدالت) لائن آف کنٹرول پر جام شہادت نوش کرنے والے پاک فوج کے سپاہی محمد تنویر ولد راجہ عاشق علی کی نماز جنازہ آبائی گاؤں ڈب لکھن پال میں ادا کی گئی ،نوجوان سپاہی کی شہادت پر علاقہ کی ہر آنکھ اشکبار تھی ،شہید کی میت کو پاک فوج کے دستے نے سلامی پیش کی ،نمازجنازہ میں پاک فوج کے افسران ،جوانوں ،کمشنر میرپور ڈویژن راجہ امجد پرویز علی ،ڈی آئی جی پولیس سردار گلفراز احمد ،ڈپٹی کمشنر بھمبر ارشد محمود جرال ،ایس پی یاسین بیگ ،قائمقام اسسٹنٹ کمشنر سماہنی راجہ ایاز احمد سمیت مقامی انتظامیہ اور عوام علاقہ کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی ،نوجوان تنویر احمد شہیدکے جنازے کے موقع پر رقت آمیز مناظر تھے ،علاقہ کی ہر آنکھ غمناک تھی ،شہید کے والد راجہ عاشق علی نے جوانسال بیٹے کی شہادت پرفخر کرتے ہوئے کہا کہ انکے بیٹے نے دفاع وطن جیسے عظیم فریضہ کی ادائیگی کے دوران اپنے فرائض سرانجام دیتے ہوئے جام شہادت نوش کیا ،بیٹے کی شہادت پر فخر ہے دفاع وطن کے لئے اگر مزید کسی قربانی کی ضرورت پڑی تو دریغ نہیں کرینگے ،اللہ تعالیٰ بیٹے کی شہادت کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے ،دریں اثنا نوجوان تنویر احمد چار بھائیوں اور تین بہنوں میں سب سے چھوٹا تھا اور اسکی ابھی شادی نہیں ہوئی تھی ،نماز جنازہ کے موقع پر شہید کی میت کو پاک فوج کے دستے نے سلامی پیش کی ،کمشنر میرپور ڈویژن راجہ امجد پرویز علی نے حکومت آزادکشمیر کی طرف سے شہید کے ورثا کو تین لاکھ روپے کا چیک بھی پیش کیا ،نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد شہید کو سپردخاک کر دیا گیا اس موقع پر اہلیان علاقہ ڈب نے شہید سپاہی تنویر احمد کی جرات وبہادری اور جام شہادت نوش کرنے پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہید تنویر احمد نے شہادت کا جام نوش کر کے اہلیان علاقہ کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے ،وفاع وطن اور دین کی سربلندی کے لئے جب بھی ضرورت پڑی بڑی سے بڑی قربانی سے بھی دریغ نہیں کرینگے ،بزدل دشمن کسی بھول میں نہ رہے ۔۔۔
Scroll To Top