عوامی حقوق کیلئے23نکاتی مطالبات پر عمل نہ ہونے پر کوٹلی کے رہائشی نے27دسمبر کو مظفرآباد تک گدھا و اونٹ مارچ کا اعلان کر دیا

donkey

مظفرآباد(بیورو رپورٹ) عدالت العالیہ کے حکم کے باوجود کوٹلی کے رہائشی محمود احمد مسافر کے 23نکاتی عوامی مطالبات پر حکومت اازاد کشمیر کی طرف سے کوئی مثبت کارروائی نہ ہونے پر محمود احمد مسافر نے 27دسمبر کو کوٹلی سے مظفرآباد گدھا و اونٹ مارچ کا اعلان کردیا ہے ۔ محمود احمد مسافر نے عوامی مطالبات کی منظوری کیلئے 76دن تک بھوک ہڑتال کی‘انہیں ریاست بدر کیاگیا جس کے خلاف انہوں نے ہائیکورٹ سے رجوع کیا۔ ہائیکورٹ نے ڈپٹی کمشنر مظفرآباد کو طلب کیا اور شہری کے مطالبات مجاز فورم پر اٹھانے کا حکم دیا۔ عدالتی حکم پر ڈپٹی کمشنر نے حکومتی سطح پر کمیٹی کے قیام کیلئے تحریک کیا۔ لیکن وزیراعظم سیکرٹریٹ میں فائل دبا لی گئی اور مطالبات پر عملدرآمد کیلئے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ جس پر محمود احمد مسافر نے دوبارہ احتجاج کا باضابطہ نوٹس ذمہ داراداروں کے نام ارسال کردیا ہے ۔ محمود احمد مسافر کی طرف سے ارباب اختیار کے نام ارسال کئے گئے ۔ مکتوب میں موقف اختیار کیا گیا کہ اگر 27نومبر تک 23نکاتی عوامی چارٹر آف ڈیمانڈ پر عملدرآمد کیلئے حکومتی سطح پر بااختیار کمیٹی قائم نہ کی گئی تو وہ 27دسمبر کو کوٹلی سے براستہ پلندری ، راولاکوٹ ، باغ مظفرآبادکی طرف گدھا و اونٹ مارچ کرینگے اور مظفرآباد پہنچ کر غیر معینہ مدت کیلئے بھوک ہڑتال کی جائیگی ۔ مظفرآبادانتظامیہ سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ پرامن بھوک ہڑتالی کیمپ کیلئے جگہ کا تعین کرے تاکہ کوئی ناخوشگوار واقعہ رونما نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ وہ بے لگام بیوروکریسی کے روائتی اور منفی ہتھکنڈوں کیوجہ سے دوبارہ غیر معینہ مدت کیلئے بھوک ہڑتال پر مجبور ہیں اور 27دسمبر سے لانگ مارچ کے بعد مظفرآباد میں غیر معینہ مدت تک بھوک ہڑتال کی جائیگی۔
Scroll To Top