نابالغ لڑکی کی زبردستی شادی، غنڈوں نے گھر پر دھاوا بول دیا، مکان تباہ، شرپسندوں کا لڑکی حوالے کرنے کے لئے جان سے مارنے کی دھمکیاں،متاثرہ خاندان کی وزیر اعظم سے مدد کی اپیل

4edb921f350a0104f58e2d77b6dbcacbae5fb16d

آٹھ مقام (بیورو رپورٹ ) نابالغ لڑکی کی زبردستی شادی، غنڈوں نے گھر پر دھاوا بول دیا، مکان تباہ، شرپسندوں کا لڑکی حوالے کرنے کے لئے جان سے مارنے کی دھمکیاں۔ پولیس کا بااثر شرپسندوں کے خلاف کاروائی سے گریز وزیر اعظم چیف سیکرٹری آئی جی پولیس انصاف دیں ۔متاثرہ خاتون کی ایوان صحافت چنار پریس کلب میں دہائی۔ خاتون بی بی زوجہ طواسین سکنہ باڑیاں ضلع نیلم نے ظلم کی داستان سناتے ہوئے کہا کہ اس کی بیٹی جس کی عمر بمشکل12 سال ہے۔ علاقہ کا بدنام زمانہ کھڑپینچ ملک غلام سرور اس کی بیٹی زاہدہ کی شادی زبردستی کسی کے ساتھ کروانا چاہتا ہے ۔ بیٹی نابالغ ہونے کے ساتھ دینی مدرسے میں زیر تعلیم ہے۔ انکار کرنے پر ملک غلام سرور نے غنڈوں نواب، فتح علی، فرید ، نذیر کے ذریعے اس کے گھر پر حملہ آور ہوئے اور بیٹی زاہدہ کو اغواء کر نے کے لئے مکان کی توڑ پھوڑ کرنے کے ساتھ اہلخانہ کو تشدد کا نشانہ بنایا اور گن پوائنٹ پر نقدی 20 ہزار زیورات اور دیگر قیمتی اشیاء لے کر ہوئی فائرنگ کرتے ہوئے بھاگ گئے ہیں۔ بیٹی مدرسہ میں ہونے کی وجہ سے ان کی اغواء کی کوشش ناکام رہی لیکن ملک غلام سرور شرپسندوں کے ذریعے لڑکی حوالے کرمے کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے۔ گھر جلانے اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔ خاتون بی بی نے بتایا کہ وہ تحریری درخواست کے ساتھ سپرنٹنڈنٹ پولیس نیلم جمیل احمد جمیل کے سامنے پیش ہوئی انھوں نے درخواست بانڈی چوکی پولیس کو مارک کر دی ہے ۔ لیکن ملزمان بااثر ہونے کی وجہ سے پولیس کاروائی سے گریز کر رہی ہے ۔ اس سلسلہ میں جب پولیس سے رابطہ کیا گیا تو پولیس نے بتایا کہ درخواست پر تحقیقات کر کے مناسب حکم کے لئے رپورٹ ایس پی نیلم کو بھیج دی گی ہے۔ حکم کی روشنی میں قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ لیکن ملزمان کو محفوظ راستہ دینے کے لئے کاروائی سے گریز کیا جا رہا ہے۔ خاتون بی بی نے وزیر اعظم ،سپیکر اسمبلی، چیف سیکرٹری ،آئی جی آزادکشمیر سے نوٹس لینے کی استدعا کی ہے اور ملزمان کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کے لئے احکامات جاری کرنے کی اپیل کی ہے۔

 

Scroll To Top